30

بجلی کی قیمتوں میں اضافہ سے پاور لومز انڈسٹری مکمل تباہ ہو جائیگی ‘ اعجاز ناگرہ

فیصل آباد(سٹاف رپورٹر)آل پاکستان کاٹن پاور لومز ایسوسی ایشن نے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)کے دبائو پر زیرو ریٹیڈ انڈسٹری کے لیے سستی بجلی کی سہولت واپس لینے اور شرح سود میں 3فیصد اضافہ پر شدید تحفظات کا اظہار کر تے ہوئے دیگر ٹیکسٹائل تنظیموں سے مشاورت کے بعد لانگ مارچ ، بھوک ہڑتالی کیمپ اور ا حتجا جی مظاہرے کرنے کا اعلان کر دیا ہے ۔بجلی کی قیمتوں میں اضافہ سے پاور لومز انڈسٹری مکمل تباہ ہو جائے گی ۔نصف سے زیادہ پاور لومز کباڑ میں فروخت ہو چکی ہیں جبکہ باقی انڈسٹری بھی تباہی کے دہانے پر کھری ہے اگر حکومت نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا توٹیکسٹائل سیکٹر تباہ ہو جائے گا ۔ جس کے نتیجے میں نہ صرف برآمدات کو جھٹکا لگے گا بلکہ لاکھوں ورکرز بے روزگار ہو جائیں گے۔ان خیالات کا اظہارچیئر مین آل پاکستان کاٹن پاور لومز ایسوسی ایشن اعجاز احمد ناگرہ نے ایسوسی ایشن کے دفتر میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے وزیراعظم میاں محمد شہباز شریف اور وفاقی وزیر توانائی انجینئر خرم دستگیر سے معیشت اور صنعت دوست اقدامات عمل میں لانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ڈالر کی اونچی اڑان، ایل سیز کی بندش، بندرگاہوں پر خام مال کے کنسائمنٹس کی کلیئرنس میں تاخیر سمیت مہنگی بجلی، گیس کی وجہ سے پہلے ہی صنعتوں کی پیداواری لاگت میں بے پناہ اضافہ ہوگیا ہے جس سے پیداواری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئی ہیں اور اب زیرو ریٹیڈ برآمدی صنعتوں کے لیے رعایتی نرخوں پر بجلی فراہمی کی سہولت ختم کرنے سے صنعتیں خاص طور پر ایس ایم ایز تباہ ہو جائیں گی۔ لہذا حکومت کو چاہیے کہ وہ معیشت کو بحران سے نکالنے اور معاشی خوشحالی لانے کے لیے صنعتوں کو سپورٹ کرتے ہوئے آسانیاں پیدا کرے تاکہ ہم دوبارہ اپنے پاں پر کھڑے ہوسکیں اور روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا کرسکیں۔رانا خرم اخلاق منج،چوہدری نواز،رانا عامر رضا، عمر فاروق کاہلوں، حاجی لیاقت انصاری، ملک طاہر مجید، ملک یوسف، سعید بھٹی، جاوید صادق کاہلوں، اکرم واہلہ اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں