23

حکمران مہنگائی پر قابو پانے میں ناکام ‘ عوام کی پریشانی میں اضافہ

صفدرآباد(نامہ نگار) مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی،سیاسی ہلڑ بازی عوام کو لے بیٹھی،ہر کوئی اپنا مطلب نکالنے کے چکر میں ہے ،کیا دکاندار اور کیا سرکاری ملازم عوام سے کسی کو سروکار نہیں ر ا توں رات امیر بننے کے خواب دیکھنا لوگوں کا شیو ہ بن گیا۔غریب کدھر جائے اور کہاں سے کھا ئے ۔پچھلی حکومت ملک میں لنگر خانوں کا جھانسا دے کے رفو چکر ہو گئی،عوام روزگار تلاش کرتے پھر تے ہیں لیکن آثار نہیں۔جس کو ڈالر کا نام تک نہیں آتا ہے وہ بھی ڈالر سے متعارف ہو چکالیکن مسئلہ کب حل ہو گا۔اس میں کوئی شک نہیں کہ مو جودہ حکومت وفاقی سطح پر تو رسک لے کر آئی اور عو ا می کی خدمت میں مصروف ہے مگر عوام کیا کریں ۔ انہیں تو مہنگائی نے جیتے جی مار دیا۔بازاروں میں دیکھیں توگاہکوں کا جم غفیر ہے،لوگ دھڑا دھڑ خر یداری کر رہے ہیں،شادی ہال اور مارکیوں میں جو کچھ دکھائی دے رہا ہے یہ کسی غریب ملک کی علا مت نہیں ہو سکتی ، شا د یو ں پر اندھا دھند پیسہ لٹایا جارہا ہے۔دوسری جا نب غریب کی آہیں ہیں ۔ فروٹ ہاتھ نہیں لگانے دیتا،بچے اپنا دودھ مانگ رہے ہیں،آٹاے کا سن کر تو چیخیئں نکل جاتی ہیں ۔ سر کا ری ملازمیں عیا شیاں ختم ہونے کو نہیں آ ر ہیں ۔ لمبی لمبی گاڑیاں سو یڈن کی نشانیاںہیں اور ملک غریب ہے،ایک آدمی ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھا ہے اور کہتا ہے کہ وہ ملک کا سب سے بڑا ہمد رد ہے ،او بھائی کسی غریب کی گلی میں جائو پھر تمہیں آٹے دال کا بھائو معلوم ہو گا۔پوش طبقہ کو تو کوئی فکر نہیں ان کے بچوں کو بھی ملازم سکول چھوڑ تے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں