25

سیوریج نالے پر پختہ تعمیرات صفائی میں رکاوٹ بن گئیں

منڈی صادق گنج (نامہ نگار) مین سیوریج نالے پر غیرقانونی پختہ تعمیرات صفائی میں رکاوٹ، متعدد بار نوٹسز جاری ہوئے پر کاروائی نہ ہو سکی ملازمین کو بھی شدید مشکلات ڈپٹی کمشنر کاروائی کریں۔ مین روڈ کالج روڈ جنرل بس اسٹینڈ سے اللہ توکل چوک تک موجود مرکزی سیوریج نالے پر غیرقانونی پختہ تعمیرات موجود ہیں سیوریج نالے پر غیرقانونی پختہ تعمیرات کے باعث اس کی صفائی ممکن نہیں سیوریج نالے کی صفائی کرنے والے سینٹری ورکرز بھی مشکلات کا شکار رہتے ہیں سینٹری ورکرز کا کہنا ہے کہ پوری کوشش کے باوجود بھی پوری طرح سیوریج نالہ صاف نہ ہونے سے سیوریج کے پانی کا فلو پوری طرح نہیں ہوتا جس سے اکثر اوقات شہر کی گلیاں میں سیوریج کا پانی پھیلا رہتا ہے ہر سال لاکھوں روپے اس سیوریج نالے کی صفائی پر خرچ کئے جاتے ہیں لیکن ان پختہ تعمیرات کے باعث ہر سال لاکھوں روپے ضائع ہو جاتے ہیں سیوریج نالے پر غیرقانونی تعمیرات کے خلاف کاروائی کرنا مقامی افسران اور عملے کے بس سے باہر ہے چیف آفیسر ضلع کونسل بہاول نگر اور ڈسٹرکٹ ریگولیشن آفیسر کو بارہا نشاندہی کے باوجود سیوریج نالے پر موجود ان غیرقانونی تعمیرات کے خلاف کاروائی نہیں ہو سکی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں