23

صفدر آباد ‘شہر کا سیوریج نظام خراب ‘ گلی محلوں میں گندہ پانی جمع

صفدرآباد(نامہ نگار)شہر کی گلیوںکی نالیوں میں بدبو ،تعفن اوراس کا گندہ پانی نالیوں سے باہر نکل گلیوں میں پھیلتا اور ساری گلی کو بدبودار بناتا ہے جس سے شہری تنگ پڑ گئے۔ بیماریاں پھیلنے کا خطرہ پیدا ہو گیا۔گلی سے گزرنا مشکل ترین بن گیا ۔سرکاری لوگ نہ جانے کہاں گم ہو گئے،کوئی افسر کسی گلی کا وزٹ نہیں کرتا۔خاکروب اور عملہ صفائی مہینوں بعد نالیکو صاف کرنے آتا ہے اور پوچا پھیر کر غائب ہو جاتا ہے۔کئی کئی دن نالی کا گارا گلی میں پڑا رہتا ہے جس سے سانس لینا بھی دشوار ہو جاتا ہے۔سوال یہ ہے کہ سرکاری انتظامیہ کدھر ہے ،یہ لوگ عوامی ٹیکسوں کے پیسے سے تنخواہ لیتے ہیں اور عوام پر ہی افسر بن کر چھائے ہوئے ہیں حالانکہ یہ افسر نہیں عوام کے خادم ہیں۔عوام مہنگائی کی ماری ہوئی ہے اور روٹی کے چکر میں دن گزارتی ہے ۔یہی ایک کمزوری ہے جس کا یہ سرکاری افسر ناجائز فائدہ اٹھا رہے ہیں۔چیف آفیسر میدان میں نکلیں ،گلیوں کا وزٹ کریں اور خفیہ چھاپے مار کر کام چوروں کے خلاف قانونی کارروائی کریں ۔اسسٹنٹ کمشنر بھی عوام کو جینے کا حق دیں ،صاف ستھرے ماحول میں سانس لینا ہر شہری کا حق ہے اور یہ حق سلب نہیں کیا جا سکتا۔ڈپٹی کمشنر بھی اپن اکردار ادا کریں اور ضلع بھر کے عوام کے حقوق کا تحفظ کرتے ہوئے عوام کے خادم بننے کا شرف حاصل کریں اور اللہ کے حضور سرخرو ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں