30

عمران خان کو ملنے والی خصوصی رعایتوں پر حکومت نالاں

لاہور (بیوروچیف)مسلم لیگ (ن)کی اعلی قیادت اور اس کے اتحادی اپنے حریف چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے خلاف اپنی ناکام حکمت عملی پر پریشان دکھائی دیتے ہیں جنہوں نے سابق وزیراعظم کے ساتھ عدالتی رویے کو خصوصی رعایت قرار دیتے ہوئے غصے کا اظہار کیا۔ رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز مسلم لیگ (ن)کی چیف آرگنائزر مریم نواز دن بھر سوشل میڈیا پر متحرک رہیں اور زمان پارک میں عمران خان کی رہائش گاہ پر پولیس کے چھاپے اور اسلام آباد کی عدالت میں ان کی پیشی کے دوران ہونے والی پیش رفت پر ردعمل دیتی رہیں۔وزیر اعظم پاکستان اور صدر مسلم لیگ (ن)شہباز شریف نے عمران خان اور ان کی پارٹی کی جانب سے قانون کی خلاف ورزی پر تنقید کی، وہ مریم نواز کے اس دعوے سے متفق نظر آئے کہ پی ٹی آئی ایک دہشتگرد تنظیم ہے۔مسلم لیگ (ن)کے کئی کابینہ ارکان نے عمران خان کے خلاف پولیس کارروائی کو جواز فراہم کرنے کے لیے پریس کانفرنس کی اور جوڈیشل کمپلیکس اسلام آباد میں پی ٹی آئی کی غنڈہ گردی کی مذمت کی۔شہباز شریف نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ حالیہ چند روز میں چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کے اقدامات نے ان کے فاشسٹ اور عسکریت پسندانہ رجحانات کے حوالے سے کسی بھی شک کو دور کردیا ہے، لوگوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنا، پولیس پر پیٹرول بم پھینکنا، عدلیہ کو دھمکانے کے لیے جتھوں کی قیادت کرنا، اس سب نے واضح کردیا کہ عمران خان آر ایس ایس (راشٹریہ سویم سیوک سنگھ)کے اصولوں پر عمل پیرا ہیں،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں