30

مسلسل تجربات کرنے سے پاکستان کرکٹ ٹیم کو نقصان ہوا’ مصباح

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان و ہیڈ کوچ مصباح الحق نے کہا ہے کہ نظر یہی آرہا ہے کہ بابر اعظم کو کمزور کیا جا رہا ہے جو نہیں ہونا چاہیے، کرکٹ کی بہتری کیلئے ملکر فیصلے کریں۔ مصباح الحق نے کہا کہ جس طرح کی پریس کانفرنسز اور ان پریس کانفرنسز میں سوالات ہو رہے ہیں وہ سب دیکھ رہے ہیں، اگر کوئی فیصلہ کرنا ہے تو سب مل بیٹھ کر کر لیں، کھلاڑی ، سلیکشن کمیٹی اور بورڈ بیٹھیں اور آرام سے فیصلہ کر لیں۔مصباح الحق نے مزید کہا کہ صورتحال کا جائزہ لیں، اگر آپ کو لگتا ہے کہ تبدیلیاں ہونی ہیں تو کر لیں، کسی اور وجہ سے آپ کسی پر پریشر ڈال دیں، پوری ٹیم ڈسٹرب ہو یہ نہیں ہونا چاہیے، پاکستان کرکٹ کی بہتری کیلئے مل کر فیصلے کریں۔سابق کپتان نے کہا کہ کرکٹ میرے خون میں ہے ، اس لیے کھیل سے آگاہ رہتا ہوں، جہاں بھی ہوں کرکٹ دیکھتا رہتا ہوں، کیا ہو رہا ہے یہ سب پتہ ہے، حال ہی میں تجربات کرنے سے پاکستان کرکٹ ٹیم کو نقصان ہوا ہے، انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے خلاف ہوم سیریز میں جو پرفارمنس رہی ہے وہ سب کے سامنے ہے، ٹیسٹ کی ٹیم بہت مشکل سے بنتی ہے ، آپ نے اس میں تبدیلیاں کر دیں، ٹیسٹ ٹیم کی ڈویلپمنٹ آسان نہیں، پاکستان کو تو ٹیسٹ میچز بھی کم ملتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ چار چار تبدیلیاں کریں تو اس سے بیٹنگ اور بولنگ یکسر تبدیل ہو جائے گی، ٹیسٹ میں ہم آف ٹریک ہو ئے ہیں، تبدیلیوں سے نتائج حاصل نہیں ہو سکتے، وائٹ بال کرکٹ میں پاکستان ٹیم بلاشبہ ایک طاقت کا نام ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں