6

پنجاب پولیس پر کچے کے ڈاکوؤں کی سہولت کاری کا الزام

لاہور(بیوروچیف)پنجاب کے کچے کے علاقے میں 2023 میں ڈاکوؤں کے خلاف ہونے والے آپریشن کی رپورٹ میں پولیس کی جانب سے ڈاکوؤں کی سہولت کاری کا انکشاف ہوا ہے ۔کچے کے علاقے میں ڈاکوؤں کے خلاف آپریشن کی پولیس رپورٹ منظرعام پر آگئی،ڈاکوؤں کے خلاف پولیس آپریشن کی رپورٹ ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ کی سربراہی میں تیار کی گئی۔پولیس رپورٹ کے مطابق کوٹ سبزل اوربھونگ کے ایس ایچ او سمیت 5 اہلکاروں نے ڈاکوؤں کی سہولت کاری کی اور پنجاب پولیس کے کچھ اہلکار کچے کے ڈاکوؤں کے سہولت کار ہیں۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ آپریشن کے دوران بے گناہ افرادکو جعلی مقابلوں میں پکڑا گیا اور رشوت لی گئی جبکہ ایس ایچ اوکوٹ سبزل اور ایس ایچ اوبھونگ نے کروڑوں روپے کی زرعی زمین کسانوں سے زبردستی ہتھیائی۔ رپورٹ میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ کچے میں تعینات ایس ایچ اوز مقامی کاشتکاروں سے سکیورٹی کے نام پر بھتہ لیتے تھے اور اگر کوئی زمیندار اُن ایس ایچ اوز سے تعاون نہیں کرتا تو ڈاکوؤں کی طرف سے اسے دھمکیاں دی جاتیں ۔ رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ سی آئی اے انچارج محمد سلیم بھی ڈاکوؤں کے دست راست پائے گئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں